تازہ ترین
Home / تجارت / درآمدات کیلیے نیا ہارمونائزڈ کوڈنگ سسٹم متعارف کرانے کا فیصلہ

درآمدات کیلیے نیا ہارمونائزڈ کوڈنگ سسٹم متعارف کرانے کا فیصلہ

01-36
اسلام آباد: وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں اشیا کی درآمد کے لیے نیا ہارمونائزڈ کموڈیٹی ڈسکرپشن اینڈ کوڈنگ سسٹم متعارف کرانے کا فیصلہ کیا ہے جو یکم جولائی 2017 سے نافذالعمل ہو گا۔
146146ایکسپریس145145 کو دستیاب دستاویزکے مطابق 100 سے زائد درآمدی اشیا کے اپ ڈیٹڈ اور نئے ایچ ایس کوڈ جاری کیے جائیں گے اور ان نئے ایچ ایس کوڈز کے مطابق درآمدی اشیا پر کسٹمز ڈیوٹی کے علاوہ درآمدی سطح پر ودہولڈنگ ٹیکس کی مد میں عائد کردہ انکم ٹیکس، سیلز ٹیکس اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کے نفاذ کے نوٹیفکیشن بھی جاری کیے جائیںگے۔
دستاویز کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریوینو نے نئے ہارمونائزڈ کموڈیٹی ڈسکرپشن اینڈ کوڈنگ سسٹم کا حتمی مسودہ تیار کر لیا ہے اور اس کی کاپی ورلڈ کسٹمز آرگنائزیشن اور ایف بی آر ہیڈکوارٹرز کو آئندہ بجٹ میں شامل کرنے کے لیے بھی بھجوا دی گئی ہے۔ ذرائع کے مطابق یہ بجٹ کا ایک بہت بڑا فیصلہ ہے جس میں درآمدی اشیا کے نئے اور اپڈیٹڈ کوڈز لگے ہیں اور اس سے مس ڈیکلریشن اورکسٹمز ڈیوٹی کے تعین کے لیے اشیا کی درست ایویلیوایشن میں مدد ملے گی جبکہ معیشت کودستاویزی شکل دینے میں مدد ملے گی۔
دستاویز میں بتایا گیا کہ پاکستان ورلڈکسٹمز آرگنائزیشن کا ممبر اور اس اس کے فیصلوں پر عمل درآمد کا پابند ہے، ورلڈ کسٹمز آرگنائزیشن ہر5سال بعد اپ ڈیٹڈ ہارمونائزڈ کموڈیٹی ڈسکرپشن اینڈ کوڈنگ سسٹم جاری کرتی ہے اور یکم جنوری 2017 سے یہ منظم سسٹم جاری کر چکی ہے لیکن پاکستان میں یہ نظام تیار نہیں، ذمے دار اور ایچ ایس کنونشن کا دستخطی ممبر ہونے کی بنا پر پاکستان ایچ ایس کوڈ کواپڈیٹ کرنے کا پابند تھا، 2012سے 2017کے کوڈز پر نظرثانی کرکے نئے ایچ ایس کوڈز والا ورژن لایا گیا ہے۔
اس سلسلے میں پیشرفت کا مقصد یہ ہے کہ بجٹ کی تیاری کا کام جاری ہے اس لیے کوئی بھی چیز بجٹ سے متصادم نہ ہو، ایچ ایس کوڈز کے تحت انکم ٹیکس 2001، سیلز ٹیکس 2009 اور فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ایکٹ 2005 میں نئے کوڈز کے تحت ترامیم کی جائیں گی تاکہ کوئی ابہام نہ پیدا ہو۔

تبصرے

تبصرے

Check Also

cars

4نئی کارسازفرمزنے پلانٹ لگانے کیلیے درخواستیں دے دیں

 اسلام آباد:  آٹو پالیسی 2016-21 کے تحت 4 نئی کمپنیوں نے کار مینوفیکچرنگ پلانٹ لگانے کے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے