Home / سی پیک / سی پیک سے متعلق بڑے بڑے انفراسٹرکچر منصوبہ جات مقررہ مدت میں تکمیل

سی پیک سے متعلق بڑے بڑے انفراسٹرکچر منصوبہ جات مقررہ مدت میں تکمیل

CPEC
واشنگٹن ۔ 9 فروری (اے پی پی) وزیرداخلہ، منصوبہ بندی و ترقی احسن اقبال نے کہا ہے کہ پاک چین اقتصادی راہداری سے نہ صرف پاکستان بلکہ پورے خطے میں ترقی و خوشحالی کے نئے دور کا آغاز ہوگا۔ انہوں نے یہ بات یہاں پاکستانی سفارتخانے میں منعقدہ خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

وزیرداخلہ نے پاک چین اقتصادی راہدری کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے کہاکہ سی پیک سے متعلق بڑے بڑے انفراسٹرکچر منصوبہ جات مقررہ مدت کے اندر تکمیل کے قریب ہیں۔ انہوں نے کہاکہ چین اور پاکستان جلد از جلد سی پیک کو فعال بنانے کے خواہاں ہیں تاکہ اس سے معیشت کو تقویت ملے اور لوگوں کی زندگیوں میں بامعنی تبدیلی آئے۔

انہوں نے کہاکہ سی پیک منصوبوں کی دیگر ممالک تک توسیع کے وسیع امکانات ہیں۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ برس پاکستانی معیشت نے 5.3کی متاثر کن شرح نمو کا مظاہرہ کیا اور یہ رواں مالی سال کے دوران 6 فیصد تک بڑھنے کی توقع ہے۔

سی پیک کے اقتصادی ثمرات حاصل ہونے سے اس میں مزید اضافہ ہو گا۔ قبل ازیں پاکستان کے سفیر اعزاز احمد چوہدری نے ابتدائی کلمات ادا کرتے ہوئے کہاکہ سی پیک چین اور پاکستان کی حکومتوں کا ایک بصیرت انگیز اقدام ہے جو دونوں ممالک اور خطے کے لئے دور رس اقتصادی فوائد لے کر آئے گا۔

انہوں نے کہاکہ سی پیک پاکستان اور چین کی دیرینہ اور آزمودہ سٹریٹیجک دوستی کو سیاسی سے اقتصادی شعبہ میں وسعت دینے کی عمدہ مثال ہے۔ دونوں ممالک کی عوام سی پیک کے مواقع سے استفادہ کرنے کے لئے بہت پرجوش ہیں۔

اس موقع پر معروف ماہر اقتصادیات اور سابق سینئر ورلڈ بینک/آئی ایم ایف عہدیدار ڈاکٹر احتشام احمد نے تقریب کی میزبانی کرتے ہوئے کہا ہے کہ سی پیک سے دنیا بھر میں بہت زیادہ دلچسپی پیدا ہوئی ہے اور اس منصوبے پر عملدرآمد چین کے ایک خطہ ایک سڑک اقدام کاحصہ ہے۔

سی پیک کی کامیابی اس امر کی غماز ہے کہ یہ اقدام خطے کے اقتصادی مستقبل کو یکسر تبدیل کردے گا۔ تقریب میں پاکستانی امریکی برادری کے ارکان اور خارجہ پالیسی ماہرین نے بڑی تعداد میں شرکت کی

تبصرے

تبصرے

Check Also

CPEC road

سی پیک پلان میں معاشی ، سماجی، تعلیمی، زرعی، صنعتی، توانائی ، ٹرانسپورٹ اور انفراسٹرکچر سمیت معاشی ترقی کے وسیع تر شعبوں کا احاطہ کیا گیا

اسلام آباد ۔ 21 فروری (اے پی پی) 56ارب ڈالر کے سی پیک طویل المدتی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے