تازہ ترین
Home / سیاحت و ثقافت / لاہور کی تاریخی میاں صلی کی حویلی کا جاہ و جلال آج بھی قائم

لاہور کی تاریخی میاں صلی کی حویلی کا جاہ و جلال آج بھی قائم

01-03

قرار داد پاکستان سے وابستہ تاریخی قالین بھی حویلی کی شان ، نصرت فتح علی ، غلام علی ، پیٹر گیبریل سمیت کئی فنکاروں نے پرفارم کیا

لاہور:اندرون لاہور شہر کی بہت ساری حویلیاں قصہ ماضی ہو گئیں مگر میاں صلی کی حویلی آج بھی قائم ہے ۔ حویلی بارور خانہ میں داخل ہوتے ہی جہان حیرت استقبال کرتا ہے ۔

حویلی کے صدر دروازے کی قامت حویلی کے جاہ و ہشم پر دلالت کرتی ہے جبکہ نفیس کام سے مزین چوبی بالکنیوں اور جھروکوں پر جھولتی سرسبز بیلوں سے جھانکتی سورج کی کرنیں حویلی کا حسن بڑھا رہی ہیں ۔

محراب نما دروازوں پر جڑے رنگ برنگ شیشے ، فوارے سے گرتے پانی کی سرگوشیاں اور جھولے سے نکلنے والی آوازوں سے کمرے کا ٹوٹتا سکوت ایک مسحور کن منظر پیش کرتا ہے ۔

حویلی میں ماضی کا سرد خانہ آج کا غالب روم ہے جہاں پیٹر گیبریل ، نصرت فتح علی خان ، غلام علی اور کئی فنکاروں نے اپنی آواز کا جادو جگایا ۔ حویلی کی دیوار پر آویزاں قرار داد پاکستان سے وابستہ تاریخی قالین تحریک پاکستان کی یادوں کا امین ہے ۔

بڑے ہال کی چھت سے لٹکتے سنہری سرخ اور سفید رنگوں کے جھلملاتے فانوس سے کمرے میں پھیلنے والی روشنیاں جہاں آنکھوں کو خیرہ کرتی ہیں وہیں صاحب حویلی کی حس جمالیات کی بھی عکاس ہیں ۔

تبصرے

تبصرے

Check Also

diwar e china

دیوارِ چین وقت کی بے مہری کا شکار بننے لگی

عجائبات عالم میں سے ایک عظیم دیوار چین انسانی ہاتھوں سے تراشی گئی دنیا کی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے