Home / پاکستان / ہائیر ایجوکیشن ترکی نے پاک۔ترک ریسرچرز موبلٹی گرانٹ پروگرام کے تحت 11 مشترکہ تحقیقی منصوبوں کی منظوری دیدی

ہائیر ایجوکیشن ترکی نے پاک۔ترک ریسرچرز موبلٹی گرانٹ پروگرام کے تحت 11 مشترکہ تحقیقی منصوبوں کی منظوری دیدی

Pakistan-Turkey-3
اسلام آباد ۔ 22 جنوری (اے پی پی) اعلیٰ تعلیمی کمیشن اور کونسل آف ہائیر ایجوکیشن ترکی نے پاک۔ترک ریسرچرز موبلٹی گرانٹ پروگرام کے تحت 11 مشترکہ تحقیقی منصوبوں کی منظوری دیدی ہے۔ یہ پروگرام نظام ہائے اعلیٰ تعلیم کو بین الاقوامی حیثیت دینے کی کاوشوں کے سلسلہ میں پاکستان اور ترکی کے مابین تعاون کا حصہ ہے۔

پروگرام کے تحت گریجویٹ طلباء اور تعلیمی شعبہ سے منسلک سٹاف کی نقل و حمل کیلئے فنڈز کی فراہمی کے ذریعے پاکستانی اور ترکش اعلیٰ تعلیمی اداروں کے درمیان نئے سائنسی اور تکنیکی تعاون کو فروغ دیا جاتا ہے۔ مذکورہ منصوبے 6 ترجیحی شعبہ جات میں تین سال کیلئے فنڈنگ کیلئے منظور کئے گئے ہیں۔

ان شعبہ جات میں توانائی، غذائی ٹیکنالوجیز، پائیدار ماحولیاتی ٹیکنالوجیز، میٹریل سائنسز، سمارٹ ٹرانسپورٹیشن سسٹمز، روبوٹس اور سمارٹ سسٹمز شامل ہیں۔ پاکستانی جامعات جنہوں نے اپنے ترکش ہم منصب اداروں کے ساتھ گرانٹ حاصل کئے ہیں

ان میں قائداعظم یونیورسٹی اسلام آباد اور کرادینیز ٹیکنیکل یونیورسٹی ترابزون، یونیورسٹی آف ایگریکلچر فیصل آباد اور نجے عمر ہالسدیمیر یونیورسٹی نجے، غلام اسحاق خان انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ سائنس اینڈٹیکنالوجی اور دملوپینار یونیورسٹی یاکرابوک یونیورسٹی ، پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف انجینئرنگ اینڈ اپلائیڈ سائنسز اور اکدینیز یونیورسٹی انتالیہ،

گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور اور بارتن یونیورسٹی بارتن، گورنمنٹ کالج یونیورسٹی فیصل آباد اور بِنگول یونیورسٹی بنگول، یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ ٹیکنالوجی لاہور اور سکاریہ یونیورسٹی سکاریہ یا استنبول ٹیکنیکل یونیورسٹی شامل ہیں۔ پروگرام کے تحت ریسرچ پروپوزلز کیلئے اگلا اعلان مئی 2018ء میں کیا جائے گا۔

تبصرے

تبصرے

Check Also

orang line train development

اورنج لائن کے ٹریک پر 10کلومیٹر طویل پٹری بچھالی گئی

لاہور۔22 فروری(اے پی پی )وزیر اعلیٰ پنجاب کے مشیر اور سٹیئرنگ کمیٹی کے چیئرمین خواجہ …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے